پیزا چاہیے تو اب ”اے ٹی ایم“ کا رخ کریں

اگر آپ سے پوچھا جائے کہ اے ٹی ایم سے کیا کیا سہولیات میسر ہوسکتی ہیں تو آپ کہیں گے کہ یہ کیسا بچکانہ سوال ہے؟ ظاہر ہے اے ٹی ایم صرف پیسوں کی دستیابی کے لیے ہی استعمال ہوتی ہے۔ آپ کا یہ جواب کل تک تو شاید ٹھیک ہوتا لیکن آج آپ کا جواب غلط ہوگیا ہے کیونکہ امریکا میں اب ایسی اے ٹی ایم مشین تیار ہوچکی ہے جہاں پیسوں کے بجائے پیزا دستیاب ہوتا ہے۔

یہ ”پیزا اے ٹی ایم“ فرانسیسی کمپنی پے لائن نے تیار کی ہے، جس کا تجرباتی استعمال امریکی ریاست اوہائیو کے شہر سنسناٹی میں موجود زیوئیر یونیورسٹی میں طلبہ کے لیے کیا گیا ہے۔

یونیورسٹی کے اسسٹنٹ نائب صدر نے میڈیا کو بتایا کہ وہ مسلسل اِس کوشش میں تھے کہ کوئی ایسا طریقہ سامنے لایا جائے جس کے تحت رات دیر تک طلبہ کو کم قیمت پر خوراک کی فراہمی ممکن ہوسکے، اور جب اُن کو پیزا اے ٹی ایم کے بارے میں خبر ہوئی تو اُن کو یہ آئیڈیا بہت پسند آیا اور فوری طور پر اِس کو اپنانے کا فیصلہ کرلیا۔

ان کا کہنا تھا کہ یونیورسٹی میں دیگر کھانوں کا آپشن بھی موجود ہے جیسے سینڈوچ اور میکسن ریستوران وغیرہ، لیکن پورے دن کھلا رہنا والا آپشن موجود نہیں تھا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ جب سے انہوں نے یہ تجربہ کیا ہے اُس کے بعد مختلف جگہوں سے 700 درخواستیں موصول ہوچکی ہیں جو یہ مشین لگانا چاہتے ہیں، جبکہ بہت سارے اسکول اور کالجز بھی چاہتے ہیں کہ وہ بھی یہ تجربہ کریں۔
pizza atm urdutribe 01
یونیورسٹی انتظامیہ نے یہ بھی بتایا کہ اے ٹی ایم پیزا کی کوالٹی میں بالکل بھی کمی نہیں ہوگی کیونکہ یہ وہی کمپنی بنارہی ہے جو گزشتہ تین برسوں میں دو قومی ایوارڈز اپنے نام کرچکی ہے۔ اِس میں بس فرق یہ ہوگا کہ یہ کچن میں تیار ہونے کے بجائے مشین میں 475 ڈگری پر تیار ہوگا۔

مشین میں بیک وقت 70 پیزا تیار ہوسکتے ہیں۔ اگر اِس کی قیمت کے حوالے سے بات کی جائے تو 12 پیس کے پیزے کی قیمت 9 سے 10 ڈالر کے درمیان ہوگی، اصل میں یہ فرق اِس لیے ہے کہ پیزا میں چیز کی مقدار کتنی رکھوائی جاتی ہے۔

پیزا اے ٹی ایم نے سب سے پہلے یونیورسٹی کی خواتین فٹ بال ٹیم کو پیزہ فراہم کیا ہے جبکہ اب بھی یہ تجرباتی دور سے گزر رہا ہے۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں