کھانے کی چیزیں، جو آپ کو مار بھی سکتی ہیں

دنیا کھانے اور پینے کی چیزوں سے بھری پڑی ہے۔ لیکن ان کو کھانے اور پینے کے طریقے ہیں۔ کچھ طریقے الہامی ذریعے سے آئے ہیں جیسے کہ مذاہب میں حلال و حرام کی تمیز اور کچھ ایسی چیزیں بھی ہیں جو حلال تو ہیں لیکن اگر انہیں غلط طریقے سے استعمال کیا جائے تو سخت نقصان پہنچا سکتی ہیں یہاں تک کہ موت کا سبب بھی بن سکتی ہیں۔

بھوت مرچ

ghost-pepper

مرچوں کی خاص طور جسے انگریزی میں 'گھوسٹ پیپر' اور عام طور پر بھوت مرچ کہا جاتا ہے۔ یہ مختلف چٹنیوں وغیرہ کو ذائقے دار بنانے کے لیے استعمال ہوتی ہے لیکن اگر اسے زیادہ استعمال کرنے کی کوشش کی جائے تو یہ کمزور آدمی کی جان بھی لے سکتی ہیں۔ دنیا کی گرم ترین کھانے کی چیزوں میں شمار ہونے والی گھوسٹ پیپر کا زیادہ استعمال پیٹ کے سنگین مسائل کو جنم دے سکتا ہے اور دل کی دھڑکن روکنے اور دورہ پڑنے کا سبب بھی بن سکتا ہے۔ یعنی بہت تکلیف دہ موت!


انڈے

raw-eggs

آپ نے بڑی باتیں سنی ہوں گی کہ انڈے کا روزانہ استعمال بہت مفید ہے۔بلاشبہ، لیکن یاد رکھیں پکے ہوئے انڈے کا استعمال۔ ہمارے ہاں صحت کے لیے کچے انڈے کھانے کو بڑا فائدہ مند سمجھا جاتا ہے حالانکہ حقیقت یہ نہیں ہے۔ کچے انڈوں کا استعمال اتنا ہی خطرناک ہے جتنا کہ کچے یا ادھ پکے گوشت کا۔ اس سے فوڈ پوائزننگ، اسہال اور قے کا خطرہ ہوتا ہے جو سنگین صورت حال میں آپ کی جان بھی لے سکتا ہے۔


سناکجی

sannakji

یہ تو دیکھنے ہی میں بہت بری ہے۔ آپ کو یقین نہیں آئے گا کہ کوریا میں اسے کھانے کے طور پر کھایا جاتا ہے۔ یہ زندہ آکٹوپس یعنی ہشت پا ہوتا ہے جسے زندہ حالت میں ہی کھایا جاتا ہے۔ جب اسے پلیٹ میں رکھ کر کھانے کے لیے پیش کیا جاتا ہے تو یہ اس وقت بھی زندہ ہوتا ہے اور اسے پکایا بھی نہیں جاتا۔ پشت پا کے ہاتھوں میں موجود چیزوں کو پکڑنے کے لیے خاص کپ ہوتے ہیں اور وہ غذا کی نالی میں چپک بھی سکتے ہیں جس سے جان بھی جا سکتی ہے۔


کھمبیاں

mushrooms

دنیا بھر میں کھمبیوں کی ہزاروں اقسام ہیں جنہیں صدیوں سے کھانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔ یہ بہت مزے کی ہوتی ہیں لیکن چند اقسام زہریلی بھی ہوتی ہیں یعنی اگر آپ زہری کھمبیاں نہیں پہچانتے تو یہ آپ کو مار بھی سکتی ہیں۔ یہ زہریلی کھمبیاں گردے، جگر یا سانس کے نظام کو تباہ کر سکتی ہیں۔ اگر آپ جنگل سے کھمبیاں تلاش کر رہے ہیں تو خاص طور پر بہت دھیان رکھیں کیونکہ یہاں کئی ایسی زہریلی کھمبیاں ہوتی ہیں جو بظاہر بالکل کھانے والی کھمبیوں جیسی ہوتی ہیں۔ زہریلی کھمبیوں سے پیدا ہونے والے مسائل کی وجہ سے موت بھی ہو سکتی ہے۔

ایلڈربیری

elder-berries

شمالی نصف کرہ اور ساتھ ہی جنوبی امریکا اور اوقیانوسیہ میں پیدا ہونے والی ایلڈربیری دیکھنے میں بڑی مزیدار لگتی ہے لیکن نہ صرف اس کے خوبصورت دانے بلکہ پتے اور بیج بھی زہریلے مواد کے حامل ہوتے ہیں۔ اس لیے اگر انہیں بغیر پکائے استعمال کیا جائے اور یہ ہضم ہو جائے تو یہ انسانی جسم میں 'سائنائیڈ' جیسا خطرناک زہر پیدا کر دیتی ہیں۔


پفرفش

pufferfish

پفر فش یا بلوفش جاپان میں بہت شوق سے کھائی جاتی ہے بلکہ مہنگے ترین کھانوں میں شمار ہوتی ہے لیکن اس کے چند اعضا مکمل طور پر زہریلے ہوتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ جاپان میں بادشاہ کے پفرفش کھانے پر پابندی ہے اور صرف وہی باورچی اس مچھلی کو پکا سکتے ہیں جنہیں سالوں کا تجربہ ہو۔


بادام

almonds

بادام کا استعمال اس حد تک خطرناک ہو سکتا ہے کہ 2007ء میں امریکا نے بادام کے درختوں کے بیجوں کو خاص عمل سے گزارنا ضروری قرار دیا تاکہ معدے اور آنتوں کی سوزش جیسے امکانات کا خاتمہ کیا جاسکے۔ بادام کی مختلف اقسام ہوتی ہیں جیسا کہ میٹھے اور کڑوے۔ اور یہ کڑوے بادام ہی ہیں جن سے خطرہ پیدا ہوتا ہے۔ کڑوے باداموں کے زہریلا ہونے کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے کیونکہ ان میں 4 سے 9 ملی گرام ہائیڈروجن سائنائیڈ ہوتا ہے۔ یہ اتنا خطرناک ہوتا ہے کہ اگر بچے 5 سے 10 کڑوے بادام بھی کھا لیں تو ان کی موت واقع ہو سکتی ہے۔


آلو

potatoes

آلو دنیا کی پسندیدہ ترین سبزیوں میں سے ایک ہے۔ شاید ہی دنیا کا کوئی ملک ہو جہاں آلو استعمال نہ کیے جاتے ہوں لیکن آلو بھی زہریلے ہو سکتے ہیں۔ خاص طور پر وہ جن پر سبز رنگ آ جائے۔ اگر زہریلا آلو کھا لیا جائے تو اس سے قے، اسہال، سر درد اور پیٹ درد ہو سکتا ہے اور اگر ایسے آلو نصف کلو بھی کھا لیے جائیں تو یہ کسی شخص کو مار سکتے ہیں۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں