بچپن کے منفی واقعات بچوں کی صحت پر اثر انداز ہوسکتے ہیں

ہم جانتے ہیں کہ بچپن میں پیش آنے والے مشکل حالات، واقعات اور حادثات بڑے ہوکر بھی نہیں بھلائے جاسکتے، لیکن ایک نئی تحقیق نے ایک ایسے پہلو پر روشنی ڈالی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ اِس قسم کے حادثات و واقعات کے بچپن پر کیا اثر پڑتے ہیں۔

تحقیق کے مطابق گھر میں جھگڑا، فساد یا کسی بھی منفی واقعے کا اثر بچپن سے ہی شروع ہوجاتا ہے، خاص طور پر بچوں کے قد اور وزن پر اِن منفی حالات کا بہت زیادہ اثر ہوتا ہے۔

اِس تحقیق نے یہ بھی بتایا کہ گھر میں جھگڑے، فساد یا دیگر مشکلات کا سامنا کرنے والے بچے دمہ، انفیکشن، نیند کی کمی اور دیگر جسمانی پریشانیوں میں مبتلا رہتے ہیں۔

اِس کے علاوہ بچے کی صحت ماں سے بھی منسلک کی گئی ہے۔ اگر ماں صحت مند ہے تو بچے میں بھی ذہنی دبائو کم پایا جاتا ہے اور کمزور ماوں کے بچوں میں ذہنی پریشانی اور دبائو کی سطح بہت زیادہ ہوتی ہے۔
اِس تحقیق کے لیے ماضی میں کی گئی 39 تحقیق کو زیر غور لایا گیا۔

امریکا کے ”سینٹر فار یوتھ ویلنیس“ کی محقق ڈیبی اوہ بتاتی ہیں کہ اِس سے پہلے تمام ہی تحقیق اِس بات کو زیر غور لائی ہیں کہ بچپن میں رونما ہونے والے حادثات اور مشکلات کا بڑے ہوکر لوگوں کے ذہن پر کس طرح اثرانداز ہوتی ہیں لیکن کسی نے بچپن ہی میں اِن چیزوں کے اثر پر غور نہیں کیا ہے اور اب وہ اِس معاملے پر اور بھی زیادہ غور کرنا چاہتے ہیں۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں