سیب، جو کٹنے کے بعد بھی خراب نہ ہو

سیب ایسا پھل ہے جسے شاید ہی کوئی پسند نہ کرتا ہو۔ آپ کو معلوم ہوگا کہ اگر سیب کو کاٹ لیں تو کچھ دیر بعد ہی ان کا رنگ تبدیل ہونے لگتا ہے۔ لیکن اب جینیاتی طور پر ایسے سیب بنائے گئے ہیں جن میں یہ "خامی" نہیں ہے۔

امریکا کے اوکیناگن اسپیشلٹی فروٹس نے ان سیبوں کو "آرکٹک ایپلز" کا نام دیا ہے اور یہ اگلے مہینے سے امریکا میں فروخت کے لیے پیش کیے جائیں گے۔

سیبوں کی تمام ہی اقسام میں یہ خاصیت ہوتی ہے کہ یہ کٹنے کے بعد رنگت تبدیل کرنے لگتے ہیں۔ اوکیناگن کا ارادہ ہے کہ وہ سیبوں کو کٹی ہوئی صورت میں فروخت کرے گا تاکہ اس کی اصل "صلاحیت" کو ظاہر کرے۔ اصل میں ادارے نے اس کی بھورا پڑنے کی صلاحیت کو بہت سست کیا ہے۔ اگر ان سیبوں کو کاٹ کر رکھ دیا جائے تو یہ رنگت تو بدلیں گے، لیکن اس میں تین ہفتے لگیں گے۔ خود دیکھ لیں جس میں ایک دن میں عام سیب اور آرکٹک سیب کے سڑنے کا فرق دکھایا گیا ہے:

کمپنی نے کام کا آغاز چھوٹے پیمانے پر کیا ہے جس کے ریاست واشنگٹن کے ایک نامعلوم مقام پر 85 ہزار درخت ہیں۔ ابتدائی طور پر 40 پونڈز کی 500 پیٹیاں 10 مقامات پر بھیجی جائیں گی البتہ وقت کے ساتھ اسے آگے بڑھانے کا ارادہ ہے۔ کمپنی کہتی ہےکہ وہ اس موسم بہار میں 3 لاکھ درخت کاشت کرے گی اور 2018ء میں اس تعداد کو 5 لاکھ تک پہنچائے گی۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں