130 شادیاں کرنے والا بالآخر مر گیا

130 بیویاں اور 200 سے زیادہ بچے رکھنے والا نائیجیریا کا باشندہ بالآخر چل بسا۔ محمد بیلو ابوبکر نامی سا شخص کو ناملعوم مرض تھا اور اس کی نماز جنازہ میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔ بتایا جاتا ہے کہ اس کی کچھ بیویاں اب بھی حاملہ ہیں۔

اس عجیب شخص کا پہلی بار انکشاف 2008ء میں ہوا تھا جس کے بعد کئی مسلمان علما نے اس پر سخت تنقید کی کیونکہ اسلام میں چار بیویاں رکھنے کی اجازت ہے اور وہ اس سے کہیں بڑھ کر شادیاں کر چکا تھا۔ علما نے مطالبہ کیا تھا کہ وہ چار کے علاوہ باقی تمام بیویوں کو طلاق دے۔ اس وقت ابوبکر کی بیویوں کی تعداد 86 تھی۔ لیکن اس نے ایسا کرنے سے انکار کردیا بلکہ شادیوں کی سنچری کو اپنی زندگی کا مشن قرار دیا۔

اس نے اپنی زندگی میں کل 130 شادیاں کیں، جن میں سے 10 طلاق پر ختم ہوئیں۔ بی بی سی کو دیے گئے ایک انٹرویو میں اس نے کہا تھا کہ خدا نے اسے ایسی صلاحیت دی ہے کہ وہ زیادہ بیویوں کو قابو میں رکھ سکتا ہے۔ "10 بیویوں والا شخص بھی زندہ نہیں بچ سکتا۔ لیکن اللہ نے مجھے ایسی طاقت دی ہے جس سے میں ان 86 بیویوں کو بھی کنٹرول کر سکتا ہوں۔"

جب ابوبکر بیلو کو گرفتار کیا گیا اس وقت بھی خاندان کے افراد نے انہیں ایک اچھا شوہر اور اچھا باپ قرار دیا تھا۔ اب وہ ایک بیماری کا شکار ہوکر چل بسا ہے جس کے بارے میں فی الحال نہیں بتایا گیا۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں