ایسی گرمی کہ لوگ انڈے تلنے لگے

پاکستان میں تو موسم سرما رخصت ہونے کی تیاری کر رہا ہے لیکن آسٹریلیا میں گرمی کی شدت میں اضافہ ہوتا چلا جارہا ہے۔ گزشتہ ہفتے سڈنی سمیت آسٹریلیا کے مغربی شہروں میں درجہ حرارت 40 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ چکا ہے۔ وروک، ایپلتھورپ اور اوکے سمیت کئی شہروں میں گزشتہ ہفتے کو گرم ترین دن قرار دیا گیا ہے۔

آسٹریلیا کے بڑے شہروں میں گرمی کا پارا صبح سویرے ہی 27 ڈگری تک پہنچ جاتا ہے۔ بعد ازاں وقت کے ساتھ گرمی کی شدت بھی بڑھتی چلی جاتی ہے۔ خاص کر مغربی شہروں بشمول رچمونڈ اور پنریتھ میں درجہ حرارت بالترتیب 40 اور 39 ڈگری تک ہوجاتا ہے۔ لیکن خوشی کی بات یہ ہے کہ گرمی کا یہ زور چند دنوں میں ٹوٹ جائے گا۔

محکمہ موسمیات کے ترجمان نے کہا ہے کہ آئندہ چند روز میں گرمی کی شدت بتریج کم ہوتی چلی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ ٹھنڈی ہواؤں کا ایک سلسلہ شہروں کا رخ کر رہا ہے اور امید کی جارہی ہے کہ آنے والے دنوں میں درجہ حرارت 20 ڈگری سینٹری گریڈ تک پہنچ جائے گا۔ دارالحکومت سڈنی میں رات کے وقت درجہ حرارت 18 ڈگری سینٹری گریڈ تک پہنچنے کا بھی امکان ہے۔ البتہ چند شہروں کے لیے آنے والے روز مزید گرم موسم لے کر آئیں گے۔ برڈزویل کی مثال لیجیے، جسے ریاست کا سب سے گرم ترین شہر مانا جاتا ہے، یہاں درجہ حرارت 47 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچنے کی توقع کی جارہی ہے جو اپنی نوعیت کا ریکارڈ ہوگا۔

ساحلی علاقوں کے لوگ تو اس گرمی کا لطف لینے کے لیے ساحل سمندر کا رخ کر رہے ہیں لیکن صحرائی علاقے کے لوگ بھی منفرد انداز سے اس گرمی کا مزہ لینے کی کوشش کر رہے ہیں۔

آسٹریلیا کے شہر کوئنزلینڈ میں گرمی کی حدت کا اندازہ ذیل میں موجود تصویر سے لگایا جاسکتا ہے جس میں ایک پولیس اہلکار اپنی گاڑی کے بونٹ پر انڈہ تلنے کی کوششوں میں مصروف ہے۔ 68 ڈگری سینٹی گریڈ درجہ حرارت کے باعث انڈہ تل تو گیا لیکن اس میں 45 منٹ کا وقت لگا۔ بہرحال، اس سے یہ بات تو ثابت ہوتی ہے کہ آج کل آسٹریلیا گرم نہیں بلکہ بہت زیادہ گرما گرم ہے۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں