ورلڈ الیون ستمبر میں پاکستان کا دورہ کرے گی

گزشتہ اتوار پاکستان سپر لیگ فائنل کے کامیاب انعقاد نے بین الاقوامی کرکٹ کونسل کو مثبت پیغام دیا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اب بین الاقوامی کرکٹ کونسل دنیا کے بہترین کھلاڑیوں پر مشتمل ورلڈ الیون کو پاکستان میں کھیلتا ہوا دیکھنا چاہتی ہے۔ اس حوالے سے رواں سال ستمبر میں چار ٹی ٹوئنٹی مقابلوں کی سیریز لاہور میں کروائے جانے پر غور بھی کیا جارہا ہے۔

لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں ہونے والی اس سیریز کو آزادی کپ کا نام دیا جائے گا۔ اس کا مقصد پاکستان میں بین الاقوامی کرکٹ کی بحالی کے لیے جاری کوششوں کو تقویت پہنچانا ہے۔

ورلڈ الیون سیریز کے لیے بین الاقوامی کھلاڑی 17 ستمبر کو دبئی میں جمع ہوں گے۔ اس کے بعد ورلڈ الیون کا دستہ لاہور روانہ ہوگا جہاں 22، 23، 28 اور 29 ستمبر کو قذافی اسٹیڈیم میں ٹی ٹوئنٹی میچز کھیلے جائیں گے۔

ورلڈ الیون میں شریک کھلاڑیوں کے ناموں سے متعلق تفصیلات بعد میں پیش کی جائیں گی۔ یاد رہے کہ پاکستان سپرلیگ فائنل میں انگلستان کے کرس جورڈن اور ڈیوڈ ملان، ویسٹ انڈیز کے ڈیرن سیمی سمیت آٹھ غیر ملکی کھلاڑیوں نے حصہ لیا تھا۔

جائلز کلارک انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ کے صدر اور آئی سی سی پاکستان ٹاسک فورس کے سربراہ ہیں جو ملک میں بین الاقوامی کرکٹ کی بحالی کے لیے پاکستان کرکٹ بورڈ کی مدد کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں کرکٹ کے شائقین کو دنیا کے بہترین کھلاڑیوں کو اپنے یہاں کھیلتے ہوئے دیکھنے کا مکمل حق حاصل ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ دنیائے کرکٹ کو پاکستان کی مدد کرنا ہوگی جو موجودہ صورتحال میں اپنی ہوم سیریز دیگر مقامات کروانے پر مجبور ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ دہشت گردوں کو شکست دینے کے لیے پاکستان کو تنہا نہیں چھوڑنا چاہیے۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں