دھمکیوں کے باعث مشہور شاپنگ مال بند

جرمن پولیس نے شہر کے مرکز میں واقع ایک مشہور شاپنگ مال کو بند کردیا ہے۔ شاپنگ مال اور اس سے ملحقہ پارکنگ کی بندش دہشت گردوں کی جانب سے حملہ کرنے کی دھمکیوں کے بعد عمل میں آئی ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ سال میونخ کے ایک شاپنگ مال میں دہشت گردی کا واقعہ پیش آیا تھا جس میں تین افراد ہلاک ہوئے تھے۔

مقامی پولیس نے سوشل میڈیا پر جاری بیان میں کہا ہے کہ ہفتے کے روز سیکورٹی وجوہات کی بنا پر شاپنگ مال کو بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پیغام میں کہا گیا ہے کہ پولیس کو ممکنہ حملے سے متعلق اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ اس کے علاوہ یہ بھی کہا گیا ہے کہ شاپنگ مال کے نزدیک موجود پارکنگ گیراج اور زیر زمیل ریلوے اسٹیشن کو بھی انہی وجوہات کے باعث بن کیا گیا ہے۔ اب تک یہ نہیں بتایا کہ گیا کہ پولیس کو کس گروہ کی جانب سے اور کس نوعیت کی دھمکی آمیز پیغامات موصول ہوئے تاہم اس حوالے سے تحقیقات جاری رکھے جانے کا عندیہ دیا گیا ہے۔

اب سے قریباً ڈھائی ماہ قبل دسمبر 2016 میں پیش آنے والے اندوہناک واقعے کے بعد سے جرمنی میں سخت سیکورٹی نافذ ہے۔ مذکورہ واقعے میں ایک شخص نے ہجوم پر ٹرک چڑھا دیا تھا جس کے باعث 12 افراد ہلاک اور دسیوں زخمی ہوگئے تھے۔ اس سے قبل گزشتہ سال جولائی یں ہونے والے ایک واقعے میں 9 افراد بھی ہلاک ہوچکے ہیں۔ یہ ہلاکتیں اس وقت ہوئیں جب میونخ کے معروف شاپنگ سینٹر میں ایک شخص نے اندھا دھند فائرنگ شروع کردی۔ بعد ازاں اس شخص نے اپنی ہی بندوق سے گولی مار کر خودکشی کرلی تھی۔

جرمن حکام کا کہنا ہے کہ اس وقت ملک میں 10 ہزار سے زائد شدت پسند افراد موجود ہیں جن میں سے لگ بھگ ڈیڑھ ہزار افراد دہشت گردی کے بڑے واقعات کا موجب بن سکتے ہیں۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں