دوستی کو گہری دوستی میں تبدیل کریں!

اچھے دوست قسمت والوں کو ملتے ہیں لیکن سمجھداری کے ذریعے ہی لمبے عرصے تک دوستی برقرار رکھی جاسکتی ہے۔ دنیا کا ہر شخص اچھے دوست کا خواہاں ہوتا ہے۔ کوئی نہیں چاہتا کہ خوشی کے موقع پر اسے بانٹنے والا کوئی نہ ہو یا پھر غمگین ساعتوں میں اسے سنبھالنے کے لیے کوئی آگے نہ آئے۔ مانا کہ تالی دو ہاتھ سے بجتی ہے اور گہری دوستی کے لیے دو لوگوں کا راضی ہونا بھی ضروری ہے لیکن اس سے بھی زیادہ اہم دوستی کے لیے بڑھنے والا پہلا ہاتھ ہے۔ اس لیے دیر نہ کریں اور ان تجاویز پر عمل کر کے اپنے دوستوں کو خود سے مزید قریب کریں۔

دیانتداری سے کام لیں
اپنے دوست کے ساتھ مکمل دیانتداری سے پیش آئیں۔ کسی بھی صورتحال میں اپنے حقیقی جذبات بیان کرنے سے نہ گھبرائیں اور دوست کو بغیر لیپہ پوتی ہے کہ اپنے خیالات سے آگاہ کریں۔ اچھا دوست نہ صرف آپ کے خیالات کو سراہے گا بلکہ اگر ضرورت ہوئی تو آپ کی اصلاح بھی کرے گا۔ اور یہی تو ایک سچے دوست کی پہچان ہے!

حسن ظن رکھیں
کوئی بھی انسان غلطی سے پاک نہیں تو پھر آپ کا دوست کیسے ہوسکتا ہے؟ لیکن ضروری نہیں کہ آپ کا دوست جان بوجھ کر یا کسی بدنیت ارادے سے ہی کوئی کام کرے۔ اس لیے اپنے دوست کی غلطیوں کو نظر انداز کرنا سیکھیں۔ اگر اسے آپ کی ضرورت ہے تو اصلاح کریں۔

اختلافات کو برداشت کریں
ہر شخص کی عادات و اطوار، چال چلن، اور پسند و ناپسند مختلف ہوسکتی ہے اور ان ہی چیزوں کا اختلاف دو دوستوں کو دور کرسکتا ہے۔ لیکن اچھے دوست ہیں ان مختلف چیزوں کو خوش دلی سے قبول کرتے ہیں بلکہ ایک دوسرے کی انفرادیت کا بھرپور لطف اٹھا سکتے ہیں۔ مثال کے طور پر اگر کوئی دوست آپ کی توقعات کے برخلاف والدہ کو خالہ یا آنٹی کہے تو اس کا ہرگز برا نہ منائیں کیوں کہ اس کا تعلق دوست کے پس منظر سے ہوسکتا ہے۔ یہ چیز اپنائیت میں اضافے کا باعث بنتی ہے جو مشکل گھڑی میں آپ کے بہت کام آئے گا۔

رابطے میں رہیں
دور جدید میں کسی بھی شخص سے رابطے میں رہنا بہت آسان ہوچکا ہے تو پھر اس میں کاہلی کیسی؟ دوستی کو مزید گہرا کرنے کے لیے ان میں سے کوئی بھی ذریعہ استعمال کرسکتے ہیں جیسا کہ موبائل فون، ای میل، فیس بک وغیرہ۔ اگر آپ کو کسی شخص سے کوئی نہیں بھی ہے تو بھی رابطہ کرلینے میں کوئی حرج نہیں۔ ہوسکتا ہے آپ کے مصروف ترین شیڈول اس بات کی اجازت نہ دے لیکن دوستی گہری کرنے کے لیے اپنی ترجیحات میں رابطے کو شامل کرنا ہی ہوگا۔

ٹیکنالوجی استعمال کریں
کہا جاتا ہے کہ ٹیکنالوجی نے آپسی تعلقات کو نقصان پہنچایا۔ لیکن اسی کی بدولت چند ایک ایسی سہولیات سامنے آئیں کہ جنہوں نے فاصلوں کو بے معنی کردیا۔ اگر انہیں درست اور موزوں طریقے سے استعمال کریں تو آپ اپنے دوست سے صرف چند کلکس کی دوری پر ہیں۔ تو ابھی اسکائپ پر کال ملائیں اور اپنے دوست سے آمنے سامنے ہو کر بات کریں۔ یقین جانیں یہ قدم صرف آپ ہی کو نہیں بلکہ آپ کے دوست کو بھی خوش کردے گا۔

اچھی یادوں کو تازہ رکھیں
پرانے دوستوں کے ساتھ آپ کے کئی یادگار دن اور لمحات ذہن میں یا تصاویر وغیرہ کی صورت میں محفوظ رہتے ہیں۔ بس ضرورت ہے تو چند منٹ نکال کر انہیں تازہ کرنے کی۔ اس کے لیے اپنے دوست کے ساتھ بیٹھک جمائیں اور مل کر پرانی یادوں کو تازہ کریں تو اس کا مزہ اور بھی دوبالا ہوجائے گا۔ اس سے آپ کو اپنی دوستی گہری ہونے کا بھی احساس ہوگا جو مستقبل میں اسے مزید گہرا کرنے کی ترغیب ملے گی۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں