تاج محل پر حملے کا خدشہ

شدت پسند عسکری تنظیم داعش کی جانب سے تاج محل سیت بھارت کی دیگر تاریخی عمارات کو نشانے بنانے کی دھمکی دی گئی ہے جس کے بعد بھارتی حکام نے حفاظتی انتظامات کو مزید سخت کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بھارتی پولیس نے کہا ہے کہ انہیں داعش کے حمایت یافتہ ایک گروپ احوال امت میڈیا سینٹر کی جانب سے تاج محل کو نقصان پہنچانے کے اشارے ملے ہیں۔ پولیس کے سربراہ پریتندر سنگھ نے خبر رساں ادارے کو بتایا کہ اب تک انہیں باضابطہ طور پر کوئی دھمکی آمیز پیغام یا اس حوالے سے کوئی خفیہ معلومات معلومات موصول نہیں ہوئیں تاہم ذرائع ابلاغ پر گردش کرنے والی خبروں کے باعث حفاظتی انتظامات کو بڑھایا جا رہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے اب روزانہ ایک دفعہ گشت کرنے کے بجائے ہر چھ گھنٹے بعد گشت کریں گے۔ اس کے علاوہ بم کو ناکارہ بنانے اور خصوصی ہتھیاروں سے لیس دستے کو بھی تاج محل کے نزدیک تعینات کردیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ کچھ روز قبل بھارتی میڈیا پر ایک تصویر دکھائی جارہی تھی جس میں ایک سیاہ پوش بھارت کی سب سے بڑے سیاحتی مرکز تاج محل کو نشانہ بنا رہا تھا۔ اس کے پس منظر میں "اگلا ہدف" بھی لکھا ہوا تھا۔ دہشت گردی کے واقعات پر نظر رکھنے والی امریکی ادارے نے کہا ہے کہ یہ تصویر منگل کے روز ٹیلی گرام کے ذریعے ارسال کی گئی ہے۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں