بنگلہ دیش نے 100واں ٹیسٹ یادگار بنالیا

سال 2000 میں ٹیسٹ اسٹیٹس حاصل کرنے والی بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم نے 100 ٹیسٹ کھیلنے کا اعزاز حاصل کرلیا ہے۔ سری لنکا کے خلاف اپنے سنچری ٹیسٹ کو یادگار بنانے کے لیے بنگال ٹائگرز نے سر دھڑ کی بازی لگائی اور پہلی مرتبہ سری لنکا کو کسی ٹیسٹ میں شکست دے کر نئی تاریخ رقم کردی۔

بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم نے گزشتہ 17 سالوں کے دوران 100 ٹیسٹ میں سے صرف 9 مقابلوں میں فتح حاصل کی ہے۔ بنگلہ دیش نے سب سے زیادہ 5 فتوحات زمبابوے جیسی کمزور ٹیم کے خلاف حاصل کر رکھی ہیں۔ اس کے علاوہ بنگال ٹائگرز نے ویسٹ انڈیز کو 2 ٹیسٹ میچز میں شکست دینے کے علاوہ انگلستان اور سری لنکا کو بھی 1،1 ٹیسٹ میچ میں چت کر رکھا ہے۔ اس کے علاوہ انہیں کسی بھی ٹیم کے خلاف کامیابی حاصل نہیں ہوسکی۔

مجموعی طور پر بنگال ٹائگرز نے 100 ٹیسٹ میں سے 76 میں شکست کا مزہ چکھ رکھا ہے جبکہ 15 مقابلے بغیر کسی نتیجے کے ختم ہوئے۔ اعداد و شمار پر نظر ڈالیں تو پتہ چلتا ہے کہ بنگلہ دیش کی ٹیم نہ صرف جیت کے تناسب میں سب سے پیچھے ہے بلکہ شکست کے تناسب میں بھی سب سے آگے ہے۔ قابل حیرت بات تو یہ بھی ہے کہ ٹیسٹ طرز کرکٹ میں بنگلہ دیش کی فتوحات کا تناسب زمبابوے جیسی ٹیم سے بھی گیا گزرا ہے۔

بین الاقوامی ٹیسٹ رینکنگ میں بنگلہ دیشی ٹیم نویں اور زمبابوے سب سے آخری یعنی 10ویں درجے پر موجود ہے۔ لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ 101 ٹیسٹ مقابلے کھیلنے والی زمبابوے کی ٹیم بھی بنگلہ دیش سے زائد فتوحات سمیٹ چکی ہے۔ زمبابوے نہ صرف بنگلہ دیش کو 6 ٹیسٹ مقابلوں میں شکست دے چکا ہے بلکہ پاکستان کو 3 اور بھارت کو بھی 2 مقابلوں میں شکست کا مزہ چکھا چکا ہے۔ یوں زمبابوے نے ٹیسٹ طرز کرکٹ میں 11 فتوحات حاصل کیں اور 64 مقابلوں میں شکست کا سامنا کرنا پڑا جبکہ 26 بلانتیجہ ختم ہوئے۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں