بچوں کے اسکرین ٹائم کو کیسے محدود کریں؟

آجکل کے والدین کی سب سے بڑی پریشانی کیا ہے؟ یہی کہ بچے ہر وقت موبائل سے چپکے رہتے ہیں اور والدین چاہتے ہیں کہ وہ دیگر سرگرمیوں میں بھی حصہ لیں اوراپنی پڑھائی کو بھی مناسب وقت دیں، لیکن یہ کام تب ہوگا جب بچے موبائل فونز کی جان چھوڑیں گے۔

برطانیہ کے رائل کالج آف پیڈیاٹرکس اینڈ چائلڈ ہیلتھ نے حال ہی میں خبردار کیا ہے کہ اسکرینوں کا  حد سے زیادہ استعمال نوعمر افراد میں کئی منفی چیزیں پیدا کر سکتا ہے جس میں نیند کی خرابی سے لے کر مختلف نفسیاتی عارضے تک شامل ہیں۔ اچھی بات یہ ہے کہ ٹیکنالوجی انڈسٹری ان مسائل کو جانتی ہے اور ان کو حل کرنے کی کوشش بھی کر رہی ہے۔ ڈیولپرز ایسے فیچرز پیش کر رہے ہیں جو لوگوں کے فون استعمال کے دورانیے کو مانیٹر کر رہے ہیں اور حد سے زیادہ استعمال پر ان کا استعمال بند کر دیتے ہیں۔  

ایسا ہر بڑے پلیٹ فارم پر ہو رہا ہے، یعنی ایپل کے آپریٹنگ سسٹم کو ہی دیکھ لیں جس کا جدید ترین ورژن iOS 12 ہے۔ اس کے ذریعے کسی بھی ڈیوائس پر مانیٹرنگ فیچرز استعمال کر سکتے ہیں۔ یعنی آئی فون ہو یا آئی پیڈ آپ ٹریکنگ کر سکتے ہیں اور اپنے فون استعمال کو محدود کرنے کے مختلف طریقے بھی اپنا سکتے ہیں۔ ان فیچرز کو "اسکرین ٹائم" کا نام دیا گیا ہے اور ان تک رسائی Settings میں جاکر حاصل کی جا سکتی ہے۔ ان فیچرز کو آن کرکے آپ تمام ایپس اور ان کے استعمال کے اوقات کو محدود کر سکتے ہیں۔ یہاں تک کہ یہ بھی کہ آپ دن میں کتنی بار فون اٹھائیں اور کتنے نوٹیفکیشن موصول ہوں، یہ بھی۔ یہ آپشنز بچوں کی ڈیوائس پر استعمال کرنا بہت آسان ہے۔ اگر یہ فرد شیئرنگ آپشنز میں آپ کی فیملی کا حصہ ہے تو آپ اسے دیکھ بھی سکتے ہیں اور اس کے فون استعمال کو کنٹرول بھی کر سکتے ہیں۔

گوگل نے بھی اینڈرائیڈ فونز میں کچھ ایسے ہی فیچرز ڈالے ہیں لیکن افسوس کی بات یہ ہے کہ ان تک رسائی صرف انہی افراد کو حاصل ہے جو گوگل کے اپنے پکسل فونز استعمال کرتے ہیں۔ لیکن امید ہے کہ آئندہ یہ فیچرز دیگر ماڈلز میں بھی آئیں گے۔

اگر آپ کے پاس کوئی گوگل پکسل فون ہے کہ جس میں اینڈرائیڈ 9 پائی انسٹالڈ ہے تو آپ گوگل پلے اسٹور میں جائیں اور "Digital Wellbeing" نامی ایپ ڈاؤنلوڈ کرلیں۔ انسٹالیشن کے بعد اینڈرائیڈ سیٹنگز میں کئی فیچرز کا اضافہ ہو جائے گا۔ ایپل کی طرح یہ سیٹنگز بھی استعمال ہونے والی ایپس کے بارے میں معلومات پیش کریں گی اور ساتھ ہی ٹائمر کا آپشن بھی دیں گی کہ اس وقت کے گزرنے کے بعد وہ ایپ بند کردی جائے۔ گراف میں یہ بھی بتایا جاتا ہے کہ آپ کتنی بار فون کو ان لاک کرتے ہیں یا نوٹیفکیشن پاتے ہیں۔ اس میں ایک ایسا آپشن بھی ہے جو ایپل میں نہیں، اس کا نام  Wind Down ہے، یہ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ڈسپلے کے رنگ دھیمے کرتے رہتا ہے تاکہ فون کا استعمال جاری رکھنے پر صارف کی حوصلہ شکنی ہو۔

یہ تکنیکی تفصیلات اپنی جگہ، لیکن اپنے بچے کو خود وقت دیں اور اسے موبائل اور دیگر اسکرینوں کے رحم و کرم پر نہ چھوڑیں، یہی بہتر ہے۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں