دنیا کے امیر ترین جوڑے کی طلاق، اربوں ڈالرز داؤ پر

دنیا کا امیر ترین جوڑا اپنی راہیں جدا کر رہا ہے۔ ایمیزن کے مالک جیف بیزوس اپنی اہلیہ میک کنزی کو شادی کے 25 سال بعد طلاق دے رہے ہیں۔ اس کا اعلان انہوں نے ٹوئٹر پر ایک مشترکہ اعلان میں کیا۔

54 سالہ بیزوس اور 48 سالہ میکنزی نے 90ء کی دہائی کے اوائل میں اس وقت شادی کی جب وہ نیو یارک میں قائم ایک ادارے میں کام کرتے تھے۔ کچھ ہی عرصے بعد وہ سیاٹل منتقل ہوگئے کہ جہاں بیزوس نے ایمیزن کا آغاز کیا۔

آج بیزوس دنیا کے امیر ترین شخص ہیں جن کی کل دولت کا اندازہ 137 ارب ڈالرز ہے۔ یعنی یہ طلاق انہیں بہت مہنگی پڑے گی۔

میکنزی متعدد ناولوں کی مصنفہ ہیں، جن میں Traps اور The Testing of Luther Albright شامل ہیں۔

گزشتہ سال دونوں نے بے گھر افراد کی مدد کرنے والے اداروں کو 2 ارب ڈالرز عطیہ کرنے اور ساتھ ہی کم آمدنی رکھنے والے افراد کے لیے ابتدائی سطح کے اسکولوں کا نیٹ ورک بنانے کا عہد کیا تھا۔

واضح رہے کہ جیف کی تقریباً تمام دولت ایمیزن کے اسٹاکس کی صورت میں ہے یعنی کہ انہیں کمپنی میں اپنے حصص کی بڑی مقدار سے ہاتھ دھونا پڑے کا۔ بیزوس کے پاس ایمیزن کے 79 ملین حصص ہیں جن کی مالیت 130 ڈالرز کے لگ بھگ ہے۔ یہ شیئرز انہیں کمپنی میں 16 فیصد حصص دیتے ہیں، یعنی وہ سب سے بڑے حصہ دار ہیں۔ کیا میکنزی ایمیزن کے آدھے حصص لیں گی؟ جس سے وہ کمپنی میں دوسری بڑی حصہ دار بن جائیں گی یا پھر وہ نقد کی صورت میں جیف سے وصولی کریں گی؟ اگر انہوں نے دوسرے آپشن کا انتخاب کیا تو بھی بیزوس کو اپنے کروڑوں شیئرز بیچنا پڑیں گے اور ایسا ہونے کی صورت میں ایمیزن کے اسٹاکس پر بہت بڑا اثر پڑے گا۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں