غربت پاکستان میں زیادہ یا بھارت میں؟ ورلڈ بینک کی رپورٹ

ورلڈ بینک کی ایک نئی رپورٹ منظرِ عام پر آ گئی ہے جس نے پایا ہے کہ اب دنیا بھر میں 10 فیصد سے کم آبادی ایسی ہے جو انتہائی غربت کا شکار ہے، یہ تعداد 2013ء میں 11 فیصد تھی اور اب مزید گھٹ گئی ہے۔

ذرا یہ نقشہ دیکھیں آپ کو اندازہ ہو جائے گا کہ غربت کا زور کہاں ہے؟

ورلڈ بینک کا کہنا ہے کہ جو شخص روزانہ 1.90 ڈالرز سے کم کماتا ہے وہ انتہائی غربت کے زمرے میں آتا ہے۔ جس حد تک ممکن ہو سکتا ہے وہاں تک بہتر سے بہتر اور تازہ ترین اعداد و شمار حاصل کرنے کے بعد صورت کچھ یوں بنی ہے کہ افریقہ غربت کی انتہاؤں کو چھونے والا بر اعظم ہے۔ یہاں صرف پانچ ممالک ایسے ہیں کہ جہاں 5 فیصد سے کم آبادی انتہائی غربت نہیں ہے اور زیادہ تر ملکوں میں یہ تعداد 25 فیصد سے زیادہ ہے۔ عوامی جمہوریہ کانگو میں 77.1 اور مڈگاسکر میں 77.6 فیصد عوام انتہائی غریب ہیں اور یوں یہ دونوں دنیا کے سب سے غریب ممالک ہیں۔

ایشیا میں چند ممالک کو دیکھنا حیران کن ہے۔ رپورٹ کے مطابق چین میں انتہائی غریب افراد کی تعداد محض 0.7 فیصد ہے۔ گزشتہ چند دہائیوں میں غربت کے خاتمے کے لیے جیسی کوششیں چین نے کی ہیں، شاید ہی کسی دوسرے ملک نے کی ہوں اور اب اس کے نتائج دنیا کے سامنے ہیں۔ اس کے مقابلے میں دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت بھارت کا حال برا ہے۔ ایک ایسے وقت میں جب کہا جا رہا ہے کہ چین اور بھارت کی معیشت 2050ء میں امریکا کو پیچھے چھوڑ دے گی، جو پہلو بھارت کے لیے تشویش ناک ہے اور اس کی راہ میں رکاوٹ بن سکتا ہے وہ انتہائی غریب افراد کی تعداد ہے۔ بھارت میں آج بھی 21.2 فیصد آبادی انتہائی غریب ہے جبکہ پاکستان میں یہ تعداد اب صرف 4 فیصد رہ گئی ہے۔ بنگلہ دیش میں 14.80 فیصد اور انڈونیشیا میں 5.70 فیصد آبادی انتہائی غریب ہے۔ ایشیا میں سب سے بڑا حال ازبکستان کا ہے کہ جس کی 62.10 فیصد آبادی انتہائی غربت میں زندگی گزار رہی ہے جبکہ پڑوسی ملک ترکمنستان میں یہ تعداد 51.40 فیصد ہے۔

یورپ میں سب سے غریب ملک رومانیہ ہے کہ جس کی 5.70 فیصد آبادی غریب ہے جبکہ ترکی 0.20فیصد کے ساتھ برطانیہ، ڈنمارک، ناروے اور آئرلینڈ کے برابر ہے۔

براعظم جنوبی امریکا میں ارجنٹینا میں غریب افراد کی تعداد محض 0.60 فیصد ہے جبکہ برازیل میں 3.40 فیصد افراد انتہائی غربت کے چنگل میں گرفتار ہیں۔ شمالی امریکا میں بھی غربت کی شرح بہت کم ہے۔ امریکا میں 1.20 فیصد اور کینیڈا میں 0.50 فیصد عوام انتہائی غریب ہیں جبکہ میکسیکو میں یہ شرح 2.50 فیصد ہے۔

فیس بک پر تبصرے



تبصرہ کریں