بلاگز

ابنِ بطوطہ ٹھیک ہی کہتا تھا...

ہم بچپن سے یہی سمجھتے چلے آئے ہیں کہ چینی، جاپانی، کوریا وغیرہ کے لوگ ”ایک ہی جیسے“ ہوتے ہیں اور ان ملکوں میں سے کسی بھی ملک کے باشندے کو دیکھتے ہی ”ہوے چینی آ“ کے الفاظ نکلتے تھے اور ساتھ ہی ہمارے رگ و پے میں ”پاک-چین دوستی“ کا ایک لطیف سا احساس

Read More

ٹی وی ڈرامے، کیا اس طرف توجہ دینی چاہیے؟

بعض اوقات یہ خیال آتا ہے کہ ہماری نسل بعض حوالوں سے خوش نصیب رہی ہے۔ ہمارے بھانجے، بھتیجے جن سے محروم رہے اور بچوں پر تو ان کا سایہ پڑنے کا بھی امکان نہیں۔ ستر کے عشرے میںپی ٹی وی نے شاہکار ڈرامے تیار کیے۔ ان میں سے کچھ دیکھنے سے ہم محروم رہے،

Read More

بھارت- بنگلہ دیش میچ، ہمارے لیے کئی سبق

بھارت بنگلہ دیش میچ دیکھنے کا لطف آیا۔ پاکستانی تو یہی چاہتے تھے کہ بھارت ہار جائے اور پھر اگر پاکستان آسٹریلیا کو ہرا دے تو سیمی فائنل میں پہنچنا آسان ہوجائے۔ مجھے البتہ یہی خطرہ تھا کہ کہیں بھارت ہار نہ جائے اور پھر سے پاک آسٹریلیا میچ کی ہائیپ پیدا کی جائے۔ خوابوں

Read More

تحفظِ نسواں بل، یہ مخالفت کیوں؟

منافقت کا معیار قول و فعل کا تضاد ہے۔ سو اسی معیار پر عمومی معاشرتی رویوں، خاص طور پر صنفی معاملات کو پرکھا جائے تو سوائے شرمندگی کے کچھ ہاتھ نہیں آتا۔ ہم چاہتے کچھ اور ہیں اور کہتے کچھ اور۔ المیہ یہ ہے کہ ہم اجتماعی طور پر صنفی تعصب میں مبتلا ہیں۔ کون

Read More

پھر ہر چیز انتہائی لذیذ ہو گئی تھی...

جب ہم انجینئرز کا گروپ چین جانے کی تیاری کر رہا تھا تو ہمارے ذہنوں میں دو سوال گردش کر رہے تھے... نماز کا کیا ہوگا؟ یعنی کہاں پڑھیں گے؟ کیا وہاں مساجد ہوں گی یا نہیں؟ اور حلال کھانے کا کیا انتظام ہوگا؟ ایک تو ہمارے تصورات میں وہی مینڈک، سانپ، کیڑے مکوڑوں والی

Read More

لوٹنا مصطفی کمال ”بھائی“ کا !

مصطفیٰ کمال ہمراہ انیس قائم خانی وطن واپس لوٹ آئے اور آتے ساتھ ہی ایک دھواں دھار پریس کانفرنس سے خطاب فرمادیا۔ محتاط ترین الفاظ میں بھی یہ ایک دلچسپ لیکن پرپیچ پیشرفت ہے۔ میری رائے میں ہم اسے چار زاویوں سے دیکھ سکتے ہیں : (1) پریس کانفرنس اور مصطفی کمال صاحب کی پرفارمنس

Read More

”چین بہ جبین“

میں پہلی بار 2 اپریل 2006ء کو چین آیا تھا... ملک ”چین“ کا نام سامنے آتے ہی خیالوں میں مسکراتے چہرے، چپٹی ناک، مسکین شکل چینی آجاتے ہیں... پھر کچھ مینڈکوں، مچھلیوں اور سانپوں کا خیال آتا ہے جو اپنی جان ”قربان“ کیے مختلف ڈشز کی صورت کھانے کی ٹیبلوں کی زینت بنے رہتے ہیں...

Read More

حکمران اور سیاسی قائدین بیرونی دوروں میں کیا کرتے رہے؟ شرمناک کہانی

میں نے عرض کیا تھا کہ سابق سفیر کرامت اللہ غوری کی کتاب ’’بارشناسائی‘‘ سے کچھ ’’ٹوٹے‘‘ آپ کی خدمت میں پیش کروں گا تاکہ آپ کو اندازہ ہو کہ بیرون ملک ہمارے حکمرانوں کی ترجیحات کیا ہوتی ہیں اور بعض اوقات کس طرح جگ ہنسائی کا باعث بنتے ہیں۔ کالم کا دامن تنگ ہے۔

Read More

خدا شناس

معرفتِ خداوند کو پانے کی تمثیل کسی بلند و بالا چوٹی کو سَر کرنے سے کی جائے تو بے جا نہ ہوگا۔ فکر و جستجو، اخلاص و اعتدال اور پیہم استقامت اگر شریکِ حال نہ ہو تو تمام سفر رائیگاں جاتا ہے۔ دین محمد صلی اللہ علیہ وآل وسلم واحد راستہ ہے جس میں کوئی

Read More

”بھلے زمانے کی بات ہے“

ہر گھر میں بابوں کا یہ پسندیدہ جملہ ہے کہ ’’بھلے زمانے کی بات ہے۔‘‘ اس جملے کی تکرار نے بے شمار لوگوں کے دماغ کا دہی بنا دیا ہے جنہیں یہ سمجھ نہیں آتی کہ کس بھلے زمانے کا ذکر ہے۔ یہ اُسی زمانے کو بھلا زمانہ کہتے ہیں جب لوگوں کے پاس پہننے کو

Read More

دماغ کی بتی کیسے جلائیں؟

کبھی کبھار ایسا لگتا ہے کہ دماغ منجمد ہے، اس میں موجود ہر خیال ”ڈیپ فریز“ ہوچکا ہے اور اسے نکالنے کی مشق بالکل ایسی ہی ہوجائے جیسے عاشورے سے قبل عید الاضحیٰ والا گوشت فریزر سے نکالنے کی کوشش کی جائے۔ ہر خیال، ہر سوچ، ہر منصوبہ اور ہر ارادہ اس طرح سے دماغ

Read More

ویلنٹائن ڈے، پھول، فول اور گوبھی

ترقی پسند مفکرین کا کہنا ہے کہ تخلیق کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ قدامت پسندانہ رویے ہیں، سو ہم نے تو فیصلہ کر لیا ہے کہ ہم نے ترقی پسند بننا ہے ۔ چاہے کچھ بھی ہوجائے، مگر پھر مسئلہ رہ جاتا ہے کہ تخلیق کیا کیا جائے؟ خاصی سوچ و بچار اور

Read More

’بیلنس لائف‘، کام چوروں کے لیے اچھا بہانا ہے!

بیلنس لائف، یعنی کہ زندگی میں وقت کو صحیح طرح سے تقسیم کرکے گزارنا ایک مفید اور قابلِ عمل ضابطہ حیات ہے۔ آپ آفس کے وقت پر کام کریں، نماز کے وقت نماز پڑھیں، شام کو گھر پر بیوی اور بچوں کو وقت دیں، کچھ وقت عزیز رشتہ داروں کے لئے، کچھ پڑھنے پڑھانے کے

Read More