لٹریچر

باسودے کی مریم - اسد محمد خان

مریم کے خیال میں ساری دنیا میں بس تین ہی شہر تھے: مکہ ،مدینہ اور گنج باسودہ۔ مگر یہ تین تو ہمارا آپ کا حساب ہے، مریم کے حساب سے مکہ، مدینہ ایک ہی شہر تھا۔ ”اپنے حجور کا شہر“۔ مکے مدینے سریپ میں ان کے حجور تھے اور گنج باسودے میں اُن کا ممدو۔

Read More

کالی شلوار - سعادت حسن منٹو

دہلی آنے سے پہلے وہ انبالہ چھاؤنی میں تھی۔ جہاں کئی گورے اس کے گاہک تھے۔ ان گوروں سے ملنے جلنے کے باعث وہ انگریزی کے دس پندرہ جملے سیکھ گئی تھی۔ ان کو وہ عام گفتگو میں استعمال نہیں کرتی تھی۔ لیکن جب وہ دہلی میں آئی اور اس کا کاروبار نہ چلا تو

Read More

زندگی صحرا- درد میں ڈوبا اِک افسانہ

عظمیٰ اختیار شام کے سائے گہرے ہورہے تھے۔ تمام پنچھی جلد از جلد اپنے ٹھکانوں پر پہنچنے کے لیے بے تاب تھے، مگر ایک کوئل اپنے آشیانے کی پروا کیے بغیر بڑھتے اندھیرے سے بے نیاز اس کے صحن میں لگے برگد کے پیڑ پر بیٹھی تھی۔اور اس کے غم کی شریک کار بنی مسلسل

Read More

میر اور ہم

قدرت نے جب سے ہمیں اُردو ادب کی خدمت کے لیے چنا ہے، اردو شاعری کے بہت سے سربستہ راز ہم پر منکشف ہوتے چلے جارہے ہیں۔ اکثر اوقات اشعار کی نسل در نسل منتقل ہوتی چلی آئی غلط شرح تاریکی میں ملفوف کسی شب اچانک ہم پر اصل ہیئت میں ظاہر ہوجاتی ہے۔ اس

Read More

ٹھنڈا گوشت - سعادت حسن منٹو

ایشر سنگھ جونہی ہوٹل کے کمرے میں داخل ہوا، کلونت کور پلنگ سے اٹھی۔ اپنی تیز تیز آنکھوں سے اس کی طرف گھور کے دیکھا اور دروازے کی چٹخنی بند کردی۔ رات کے بارہ بج چکے تھے۔ شہر کا مضافات ایک عجیب پراسرار خاموشی میں غرق تھا۔ کلونت کور پلنگ پر آلتی پالتی مار کر

Read More

آئینہ اور پھول - سلمان باسط

میرے قدم ایک دم رُک گئے۔ ایسا لگا کسی نے آواز دی ہو۔ راہداری کے موڑ پر لمحہ بھر کو سرمئی آنچل لہرایا اور غائب ہوگیا۔ اک مانوس سے مہک میری سانسوں میں اترنے لگی، وہ وہی تھی۔۔۔ وہی۔۔۔ جو نجانے کب میرے خوابوں کی منڈیر پر چڑھ آئی تھی، کسی زہریلی آئی وی کی

Read More

سمے کا بندھن - ممتاز مفتی

انسانی نفسیات کی پرتوں میں زندگی کا سراغ لگاتا قصہ ایک البیلے افسانہ نگار کی جادو بیانی آپی کہا کرتی تھی ’’سنہرے، سمے سمے کی بات ہوتی ہے۔ ہر سمے کا اپنا رنگ، اپنا اثر ہوتا ہے۔ اپنا سمے پہچان، سنہرے۔ اپنے سمے سے باہر نہ نکل۔ جو نکلی تو بھٹک جائے گی۔ اب سمجھ

Read More

ناسٹیلجیا (8)

آپ بیتی ادب کی ایک ایسی صنف ہے، جس کے ذریعے ہمیں کسی ایسے شخص کے حالاتِ زندگی تک رسائی ہوتی ہے، جس نے زندگی کے کسی بھی شعبے میں نام کمایا ہو۔ بظاہر تو لکھنے والا اپنی داستانِ حیات رقم کرتا ہے لیکن اس کی طرزِ نگارش اور جزیات نگاری اسے جگ بیتی کا

Read More

سمندر کی لہروں سے

الفرڈ ٹینی سن کی شاہکار نظم Break, Break, Break کا اُردو ترجمہ احمد عقیل روبی لہرو ٹکراتی رہو بھورے خنک پتھر سے میری خواہش ہے کہ میں نوکِ زباں پر لائوں وہ خیالات جو اُبھرے ہیں میرے سینے میں کھیل کے نشے میں بدمست مچھیرا لڑکا بہن کو کیسے وہ چلا کے صدا دیتا ہے اور کشتی میں

Read More

سلمیٰ اور کرونس - شاہین کاظمی

گھپ اندھیرا اور اتنا گہرا سکوت کہ سانسوں کی آواز بھی کسی شورِ قیامت سے کم نہ تھی۔ چاروں طرف پھیلی ہوئی عجیب سیلی سیلی باس کھردرا اور سرد فرش، ساتھ چھوڑتے ہوئے اعصاب اور شَل ہوتا ہوا بدن۔ ذہن پر جیسے جالے سے تنے ہوئے تھے۔ کچھ بھی تو محسوس نہیں ہورہا تھا۔ وہ

Read More

اک اور طلسمِ ہوش ربا

معروف افسانہ نگار شاہین کاظمی کی کتاب ”برف کی عورت“ پر معروف شاعر پروفیسر سلمان باسط کی تقریظ لفظ ایک ایسی اکائی ہے، ایک ایسی قوت ہے جو کائناتی وسعتوں میں اپنا آپ منواتی اور اپنا اثر دکھاتی ہے۔ الفاظ اپنے عہد کی سچائی کا واضح اور واشگاف اعلان ہیں۔ جہاں ان کی اثر پذیری

Read More

سوچ لینے دو

ابدال بیلا   دیکھو کام میں جتے لوگوں کو تفریح کا حق ہوتا ہے کام کے بعد غم روزگار سے فارغ ہوکے پھر کوئی چاہے آرام کرے، سوئے کتاب پڑھے، لکھے گنگنائے سیر پہ نکلے یا بھاگے دوڑے کوئی کھیل کھیلے مزے کرے حق ہے نا؟ ہر ہوش مند مزدور کا پھر کیوں مجھ سے وضاحتیں طلب

Read More

”اللہ کی لاٹھی بے آواز ہے“

صدف زبیری ایسی درد بھری آواز تھی کہ ناچار مجھے بالکنی سے جھانکنا ہی پڑا۔ ”اللہ کی لاٹھی بے آواز ہے۔“ ”قسمت کا چکر چل جائے تو نماز تسبیح بھی کام نہیں آتے۔“ نیچے نابینا پھٹے پرانے کپڑوں میں مفلوک الحال بڈھا فقیر گلی میں تقریباً اوندھے منہ پڑا صدائیں لگا رہا تھا۔ کراچی جیسے

Read More

ناسٹیلجیا (7)

آپ بیتی ادب کی ایک ایسی صنف ہے، جس کے ذریعے ہمیں کسی ایسے شخص کے حالاتِ زندگی تک رسائی ہوتی ہے، جس نے زندگی کے کسی بھی شعبے میں نام کمایا ہو۔ بظاہر تو لکھنے والا اپنی داستانِ حیات رقم کرتا ہے لیکن اس کی طرزِ نگارش اور جزیات نگاری اسے جگ بیتی کا

Read More

ایک شوہر کی لازوال داستانِ وفا

صدف زبیری بائیس برس کی عمر میں جٹھانی بیاہ کر لے گئی۔ تئیسویں برس میں وہ ایک بیٹے کو گود میں لیے اپنے دو کمروں کے چھوٹے سے گھر میں شفٹ ہوگئی۔ محبت اور گھر کے خواب کی تکمیل چہرے سے روشنی بن کر پھوٹی پڑتی تھی، البتہ کہیں تہہ میں ہلکی سے زردی جھانک رہی

Read More

” حنیف مجھےمارتا ہے“ ...

صدف زبیری وہ ابو کے سامنے بیٹھی زارو قطار رو رہی تھیں۔ یہ آئے دن کا معمول تھا۔ حنیف ابو کی سرزنش اور ڈانٹ ڈپٹ پر کچھ دن ٹھیک رہتا، پھر وہی رویہ ۔ خالہ تین بیٹوں اور پانچ بیٹیوں کی ماں تھیں۔ سارے بچے بیاہے ہوئے۔ بڑے بیٹے کی تین بیٹیاں تھیں۔ وہ بیرون

Read More

عالی دماغ و بلند فکر شخص کا انجام جو دل چیر گیا

فیض اللہ خان سینئر صحافی / بلاگر کئی برس بعد وہ اچانک ہی مل گیا تھا۔ وہ بھی سر راہ۔ مجھے اس کو شناخت کرنے میں بالکل بھی دشواری نہ ہوئی۔ سیکنڈ کے ہزارویں حصے میں، میں ایک عشرہ پیچھے چلا گیا جب وادی کاغان میں، میری اور اس کی آخری ملاقات ہوئی تھی۔ تب اس

Read More

ناسٹیلجیا .... 6

آپ بیتی ادب کی ایک ایسی صنف ہے، جس کے ذریعے ہمیں کسی ایسے شخص کے حالاتِ زندگی تک رسائی ہوتی ہے، جس نے زندگی کے کسی بھی شعبے میں نام کمایا ہو۔ بظاہر تو لکھنے والا اپنی داستانِ حیات رقم کرتا ہے لیکن اس کی طرزِ نگارش اور جزیات نگاری اسے جگ بیتی کا

Read More

غریب... دُکھ اور درد میں لپٹی کہانی

عظمیٰ اختیار جانے کل کی ذلت کا اثر تھا یا دائیں ٹانگ میں لگنے والی چوٹ کا درد... کہ وہ ننھا منا ساجد آج کام پر جانے سے انکاری تھا... دس سالہ ساجد اماں کی گود میں سر رکھے دائیں گھٹنے میں لگے زخم کی تکلیف کا بتاکر آج کام سے چھٹی کی ضد کررہا

Read More

گھن - ڈورس ڈوری

مشہور جرمن فلم ڈائریکٹر، پروڈیوسر اور ادیب ڈورس ڈوری کا شاہکار افسانہ” Messer & Gabel“ ترجمہ: شاہین کاظمی ”میری ماں کا کہناتھا ایسا تو ہونا ہی تھا، اس کے خیال میں، میں بچپن ہی سے ایسی تھی؛ نا شکری اور ناخوش، وہ مہینے میں دو بار مجھ سے ملنے آتی ہے۔ اپنے ساتھ ہمیشہ کافی،

Read More