لٹریچر

مینوں لے چلـے بابلا!

افسانہ: خدیجہ مستور پتلی سی نالی میں پانی کی دھار رینگ رہی تھی اور صابن کا پھولا پھولا جھاگ پانی پر غلاف کی طرح چڑھا ہوا معلوم ہورہا تھا۔ وہ ابھی ابھی اندھیرے غسل خانے سے نہلاکر نکلا تھا اور تولیہ سے بال خشک کرتا ہوا صحن میں پڑی ہوئی آرام کرسی کو دھوپ میں گھسیٹ کر

Read More

زندگی خوبصورت ہے - شاہین کاظمی

شاہین کاظمی زیورخ، سوئٹزرلینڈ زندگی خوبصورت ہے۔ گہرے نیلے آسمان پر تیرتے سفید بادلوں کے نرم روئی جیسے گالے سردیوں کی سنہری دھوپ میں رچی تمازت جو رگ و پے میں اُترتی ہوئی محسوس ہوتی ہے۔ فضاؤں میں پھیلی سنگتروں کی کھٹی باس اور خنکی، گھاس کی پتیوں پر ٹکے اوس کے قطرے، جو کرنوں

Read More

تریاق - شاہین کاظمی

افسانہ:  شاہین کاظمی زیورخ، سوئٹزرلینڈ بربتوں سے رات اُتری تو راستوں پر اندھیرا بچھنے لگا، خنکی بڑھ رہی تھی، وہ قدرے پریشان ہوگیا۔ ”شاید میں راستہ بھول گیا ہوں، ورنہ ابھی تک تو مجھے وہاں پہنچ جانا چاہیے تھا۔“ اس نے بیلوں کو ہُشکارا، لیکن دن بھر کے ناہموار راستے نے انہیں بھی تھکادیا تھا۔ ہُشکارنے

Read More

مجمع باز

اگر کوئی ”فارغ البال“ سا شخص ادھیڑ عمری کا جوبن چمکا، آنکھوں میں حیرانی لیے، سر کو کھجاتا، سڑک پر زگ زیگ بناتا، زیر لب کچھ نہ کچھ بولتا، کبھی مسکراتا، کبھی کھلکھلاتا اور کبھی یکدم سنجیدہ ہوتا ہوا آپ کو نظر آئے تو آپ پر لازم ہے کہ ا‎سے انور مسعود سمجھ لیں۔ اس

Read More

کاغذ کی نائو

جی چاہتا ہے پرانی گلی میں جائوں پھر وہ پرانا بچہ بن کے جو بارش میں گھنٹوں نہاتا تھا گلی کی نالیوں میں بہتے بارش کے پانی میں چھینٹے اُڑاتا تھا اپنے ہم جولیوں سے مل کر کاغذ کی نائو میں بارش کا پانی بھر بھر کے لاتا تھا لے جاتا تھا وہ کشتی ڈوب جاتی تو برستی بارش

Read More

چُھپا ہوا مَیں

مورا تھان منگن ترکی زبان کے معروف کہانی کار ہیں۔ ان کے افسانوں میں ترکی کلچر کی بھر پور عکاسی نظر آتی ہے۔ موراتھان کی اس کہانی میں بچوں کے احساسات و جذبات کو بیان کیا گیا ہے۔ دنیا کے بڑے مفکرین مانتے ہیں کہ بچے سے زیادہ حساس اور کوئی نہیں ہوتا۔ موراتھان منگن (Murathan

Read More

عمران خان کے بچپن کی کہانی، انہی کی زبانی

جب میں پیدا ہوا، پاکستان پانچ سال کا ہوچکا تھا۔ لاہور میں اپنے خوشحال خاندان کے ساتھ آسودہ زندگی جیتے ہوئے ملک کا مستقبل مجھے روشن لگتا۔ یہ ایک خوابناک بچپن تھا۔ کھیل کود کی آزادی اور وہ تحفظ جو ایک پھلے ہوئے تگڑے خاندان میں ہوتا ہے۔ زمان پارک کے اردگرد جہاں میں پلا بڑھا،

Read More

سب سے زیادہ خطرناک

شیر کے ڈرائونے چہرے کو دیکھ کر مشکل سے کوئی آدمی یقین کرے گا کہ اس پھاڑ کھانے والے درندے سے بھی زیادہ خطرناک دشمن کوئی انسان کے لیے ہوسکتا ہے۔ مگر حقیقت یہ ہے کہ انسان کا سب سے زیادہ خطرناک دشمن شیر یا بھیڑیا نہیں۔ اس کے لیے سب سے خطرناک دشمن وہ

Read More

اُردو کے بیس مشہور ضرب الامثال اور کہاوتیں

(1) آبلا گلے پڑ، نہیں پڑتی تو بھی پڑ مفہوم: لڑاکا اور جھگڑالو عورت کی نسبت کہتے ہیں جو خواہ مخواہ لڑائی مول لیتی پھرتی ہو۔ (2) آبے سونٹے تیری باری، کان چھوڑ کنپٹی ماری مفہوم: کسی کام میں لگاتار ناکام رہنے کے بعد آخری تدبیر اختیار کرنا۔ (3) آبیل مجھے مار مفہوم: خواہ مخواہ کسی

Read More

”ایسے پاکیزہ سیرت لوگ پھر کہاں ملتے ہیں!“

”جس مقام پر اب منگلا ڈیم واقع ہے، وہاں پر پہلے میرپور کا پرانا شہر آباد تھا۔ جنگ کے دوران اس شہر کا بیشتر حصہ ملبے کا ڈھیر بنا ہوا تھا۔ ایک روز میں ایک مقامی افسر کو اپنی جیپ میں بٹھائے اس کے گرد و نواح میں گھوم رہا تھا، راستے میں ایک مفلوک

Read More

شہروالو! ہوشیار ہوجائو! بیگم کار چلانے لگ گئی ہیں!

ایک عورت نے اپنے شوہر کو دفتر فون کیا اور پوچھا: ’’آپ مصروف تو نہیں؟‘‘ شوہر نے دانت پیس کر کہا: ’’میں اس وقت میٹنگ میں ہوں۔ کیوں فون کیا ہے؟‘‘ جواب آیا: ’’آپ کو ایک اچھی اور ایک بری خبر سنانی تھی۔‘‘ شوہر گرجا: ’’خبردار جو کوئی بری خبر سنائی، بتاؤ اچھی خبر کیا

Read More

حزنِ انسان

جسم اور روح میں آہنگ نہیں، لذت اندوز دلآویزئ موہوم ہے تُو خستہء کش مکشِ فکر و عمل! تجھ کو ہے حسرتِ اظہارِ شباب اور اظہار سے معذور بھی ہے جسم نیکی کے خیالات سے مفرور بھی ہے اس قدر سادہ و معصوم ہے تُو پھر بھی نیکی ہی کیے جاتی ہے کہ دل و

Read More

پوسٹنگ

فوج میں پوسٹنگ اس تواتر سے ہوتی ہے کہ پوسٹنگ کی عادت سی ہوجاتی ہے۔ بالکل ایسے ہی جیسے ہر دو ہفتے کے بعد یا تو باربر گھر آجاتا ہے یا فوجی خودبخود باربر شاپ کی طرف کھنچا چلا جاتا ہے۔ کسی اسٹیشن پر دو سال سے زیادہ عرصہ گزر جائے تو ایم ایس برانچ (جو

Read More

دنیا کے انوکھے آرٹ کے خالق سے ملیے

کسی زبان کی اہمیت کا اندازہ اس بات سے لگایا جاتا ہے کہ اس کے دم توڑتے ہی اس سے وابستہ تہذیب و ثقافت اور رِیتیں و رسمیں بھی ناپید ہوجاتی ہیں۔ ایک اندازے کے مطابق اس وقت صرف پاکستان میں 27 زبانیں معدومیت کے خطرے سے دوچار ہیں، جن کے احیا کے لیے کوششیں

Read More

ایک کتاب، ایک حقیقت

یہی کوئی اسّی سال ہونے کو آرہے ہیں، برطانیہ میں ایک کتاب بہت مقبول ہوئی۔ کتاب کا نام تھا ’’مائی خیبر میریج‘‘، در ہ خیبر میں میری شادی۔ یہ خود نوشت سوانح اسکاٹ لینڈ کے شہر گلاسگو کی ایک خاتون نے لکھی تھی۔ ان کا نام موراگ مرے عبداللہ تھا۔ بدقسمتی سے ان کی کہانی

Read More

ایک بوڑھی کی تنہائی کی دُکھی داستان

وہ اپنے بستر میں بے سدھ پڑی تھی۔ ایک ہاتھ اور آنکھوں کے سوا اس کا سارا جسم مفلوج تھا۔ نقاہت اِس قدر تھی کہ ہاتھ کو بھی وہ محض سینے تک حرکت دے سکتی تھی۔ بیماری نے اس کی ساری طاقت گویا سلب کر لی تھی۔ اس کا گوشت سوکھ گیا تھا۔ نیلاہٹ کی

Read More

”گفتگو کا آرٹ“

جو کچھ کہنے کا ارادہ ہو ضرور کہیے، کوئی دوسرا بول رہا ہو تو پروا مت کیجیے۔ دوران گفتگو میں خاموش رہنے کی وجہ صرف ایک ہونی چاہیے، وہ یہ کہ آپ کے پاس کہنے کو کچھ نہیں ہے۔ جتنی دیر باتیں کرنا چاہتے ہوں، کرتے رہیے۔ اگر کسی اور نے بولنا شروع کردیا تو

Read More

پانی کا قانون!

دوستی کو سمجھنا ہے تو پانی کا قانون سمجھو پانی کا سب سے بڑا قانون یہ ہے کہ وہ اپنی سطح برقرار رکھتا ہے چاہے اس کی راہ میں پہاڑ آئے وہ اسے کاٹ کے یا راہ بدل کے کسی نہ کسی طرح نکل جائے گا اسے پروا نہیں ہوتی اس کے راستے میں کون بیٹھا ہے کوئی

Read More

جاذب قریشی کے چند اشعار

جاذب قریشی جدیدغزل کے اہم ناموں میں سے ایک ہیں اور تنقید میں بھی ان کا کام بہت وسیع ہے۔ شاعر علی شاعر کے زیرِ ادارت شائع ہونے والے ادبی رسالے عالمی رنگ ادب کراچی نے جاذب قریشی کی پچاس سالہ ادبی خدمات کوایک ضخیم نمبرمیں سمویا ہے۔ اس نمبر میں شامل ان کی غزلوں

Read More